89

گڑیا چپ کیوں؟

چار سال کی گڑیا کو جب شاپ والے انکل کو چھڑتے دیکھا تو ماں چپ رہی. بس گڑیا کو شاپ پر جانے سے روک دیا۔ بارہ سالہ گڑیا کو باہر جانے پر لڑکوں نے چھیڑا تو ماں سکول جانے سے ہی نہ روک دے یہ سوچ کر گڑیا چپ رہی۔

دسویں جماعت کے امتحانوں سے پہلے ٹیچر نے گڑیا کو کلاس کےبعد روکنا شروع کر دیا۔ ٹیچر بورڈ میں داخلہ نہ روک دے یہ سوچ کر گڑیا چپ رہی

دور کے انکل نے اپنے بیٹے کے لیے رشتہ مانگ لیا گڑیا کو پسند نہ تھا مگر ابا نے قرضہ لیا تھا اس لیے نے ہاں کر دی گڑیا پھر چپ رہی اورمنگنی ہو گئی۔

اقبال (جس کے ساتھ منگنی ہوئی تھی) نے گندے گندے میسج کرنا شروع کر دیے اور ملنے کی ضد کرنے لگا۔ گڑیا جواب نہ دیتی تھی تو اس کی ماں کو کال کر کے منگنی توڑنے کی دھمکی دیتا تھا۔ گڑیا چپ رہی


کالج سے واپسی پر گڑیا کو لے کر شاپنگ پر جانے کی ضد, کرتا تھا اور معنی خیز نظروں سے اسے دیکھتا گڑیا چپ رہی اور کس سے کہتی ۔ شادی ہو گئی

اقبال نے اسے بہت مارا اور کہا کہ مجھ سے فون پر بات نہیں کرتی تھی, بڑی نیک پروین بنتی تھی۔ کدھر منہ کالا کیا۔ گڑیا چپ رہی۔

اگلے دن منصور نے کہا میں تجھے واپس باپ کے گھر چھوڑ دوں گا اور اس پر لمبے لمبے الزامات لگائے اسے کمرہ بند کر دیا گیا گڑیا چپ رہی

.شام کی چائے میں گڑیا نے زہر پی لیا اور اپنے آخری گھرچلی گئی۔ خبر لگی دلہن نے آشنا سے شادی نہ ہونے پر زہر پی لیا۔ اور ہمیشہ کے لیے چپ ہو گئی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں