43

چنیوٹ میں 14 سالہ لڑکی کے ساتھ مبینہ طور پر اجتماعی زیادتی

چنیوٹ: پنجاب میں عصمت دری کا ایک اور واقعہ سامنے آیا ہے ، جہاں چنیوٹ میں ایک 14 سالہ بچی کے ساتھ اجتماعی عصمت دری کی گئی ہے۔ چنیوٹ کے علاقے راجوعہ میں پیش آنے والے اس واقعہ کا معاملہ بچی کے چچا کی شکایت پر درج کیا گیا ہے۔

متاثرہ خاتون نے اپنے ابتدائی بیان میں کہا کہ اسے دو افراد نے اغوا کیا تھا جب وہ اپنے والد سے ناراض ہوکر گھر سے نکلی تھی۔ بچی کا مزید کہنا تھا کہ ‘مجھے ایک ہفتے کے لئے یرغمال بنا لیا گیا تھا اور اجتماعی عصمت دری کی گئی تھی۔’

ادھر پولیس ملزمان کی گرفتاری کے لئے چھاپے مار رہی ہے اور بچی کا طبی معائنہ کیا جارہا ہے۔

21 ستمبر کو اسی نوعیت کے ایک الگ واقعے میں ، اوکاڑہ کے دیپال پور شہر میں ڈکیتی کے دوران ایک خاتون کے ساتھ مبینہ طور پر اجتماعی عصمت دری کی گئی تھی۔

پولیس نے متاثرہ شخص کے شوہر کی شکایت پر سات ملزمان کے خلاف واقعے کی ایف آئی آر درج کرلی ہے۔ ایک پولیس عہدیدار نے بتایا کہ اس خاتون کو تشویشناک حالت میں تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال دیپالپور منتقل کیا گیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں