39

اسلام آباد ہائیکورٹ کا PUBG پابندی ختم کرنے کا حکم

اسلام آباد: اسلام آباد ہائیکورٹ (آئی ایچ سی) نے جمعہ کے روز آن لائن گیم پب جی سے پابندی ختم کردی۔

اسلام آباد ہائی کورٹ نے منگل کے روز مشہور آن لائن گیم PUBG کی معطلی کو کالعدم قرار دینے کی درخواست پر اپنا فیصلہ محفوظ کرلیا تھا۔

اس پابندی کو ختم کرنے کے فیصلے کا اعلان جسٹس امیر فاروق نے کھیل پر پابندی کے خلاف دائر درخواست کی سماعت کے دوران کیا۔

اس سے قبل ہی پاکستان ٹیلی مواصلات اتھارٹی (پی ٹی اے) نے واضح کیا تھا کہ ملک میں آن لائن گیم پی یو بی جی پر نافذ رہنے پر پابندی عائد ہے۔

پی ٹی اے کے جاری کردہ اعلامیے کے مطابق ، PUBG گیم کی انتظامیہ مطلوبہ معلومات دینے میں ناکام رہی جس میں گیم کے سیشن ، صارفین کی تعداد اور اس کے کنٹرول سے متعلق تفصیلات شامل ہیں۔

پاکستان ٹیلی مواصلات اتھارٹی (پی ٹی اے) نے یکم جولائی کو کھیل کو عارضی طور پر معطل کردیا تھا ، کہا تھا کہ اس کھیل کو ‘لت لگانے’ ، وقت کی ضیاع اور بچوں کی جسمانی اور نفسیاتی صحت پر اس کے ممکنہ منفی اثرات کے بارے میں متعدد شکایات موصول ہوئی ہیں۔

پی ٹی اے کی یہ کارروائی لاہور ہائیکورٹ (ایل ایچ سی) میں دو بچوں کے والدین کی طرف سے شکایت کے پس منظر میں سامنے آئی ہے جنہوں نے لاہور میں خود کو خودکشی کرنے کے بعد انھیں کھیل کھیلنے کی اجازت سے انکار کردیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں