21

رمیز راجہ ایس سی پی کا یوٹیوب پر پابندی عائد کرنے پر اظہار خیال

لاہور: سابق ٹیسٹ کرکٹر رمیز راجہ کے خیال میں یوٹیوب پر پابندی لگانا بیکار فیصلہ ہوگا اور وہ عالمی سطح پر پاکستان کو پسماندہ لے جاسکتا ہے۔

سپریم کورٹ آف پاکستان (ایس سی پی) کے ملک میں آن لائن ویڈیو شیئرنگ پلیٹ فارم پر پابندی عائد کرنے کے اشارے کے بعد ، راجہ نے اپنے یوٹیوب چینل پر اس معاملے سے متعلق اپنی رائے کا اظہار کیا۔

کرکٹر سے تبدیل ہونے والے یوٹیوبر نے کہا کہ بہت سارے پاکستانی اس پلیٹ فارم کے ذریعے اظہار خیال کر رہے ہیں اور اگر یہ ملک میں گرتے ہیں تو پوری صنعت کو نقصان پہنچے گا۔

‘میرے خیال میں صرف چند جاہل لوگوں کے لئے ، ملک میں یوٹیوب پر پابندی لگانا غیر منصفانہ ہے۔ بہت سارے لوگ ہیں جو اس کے ذریعہ کما رہے ہیں۔ اگر ملک میں یوٹیوب پر پابندی عائد ہوگئی تو بہت سارے لوگ اپنی ملازمتوں سے محروم ہوجائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے لئے یہ ضروری ہے کہ ہم جدید دور کی دنیا کے مطابق سوچیں اور منصوبہ بندی کریں جہاں ممالک ڈیجیٹل طور پر ترقی کر رہے ہیں۔ مجھے لگتا ہے کہ ہمیں سوشل میڈیا سائٹس پر پابندی عائد کرنے کی بجائے ’ڈیجیٹل پاکستان‘ کو فروغ دینا چاہئے۔

یہاں یہ واضح رہے کہ سپریم کورٹ آف پاکستان (سوشل میڈیا) نے سوشل میڈیا پر بے ضابطہ مواد بالخصوص عدلیہ ، مسلح افواج ، اور حکومت کے خلاف مواد کے بعد ملک میں یوٹیوب پر پابندی عائد کرنے کا اشارہ کیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں